بند کریں
شاعری آصف شفیع

زمیں کہیں ہے مری اور آسمان کہیں

-

zameen kahin hai mere or


(311) ووٹ وصول ہوئے