بند کریں
شاعری فاخرہ بتولچاند نے بادل اوڑھ لیاآج پھر دیر تلک

(204) ووٹ وصول ہوئے