بند کریں
شاعری حسنین سحروہ جو اپنا ہی نہ تھا آخر اُسے کھونا ہی تھا

(5) ووٹ وصول ہوئے