بند کریں
شاعری جمال احسانیکس کو سمجھاؤں بھلا مجھ کو جو یار افسوس ہے

(190) ووٹ وصول ہوئے