بند کریں
شاعری جمیل احمد جمیل

آنکھوں میں جھلملاتے اُتریں گے خواب کیسے

-

ankhoon main jhilmilate utrain ge khawab kaise


(78) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان