بند کریں
شاعری لیاقت علی عاصمکیا صرف اسی لیے تھا سارا سفر ہمارا

(342) ووٹ وصول ہوئے