بند کریں
شاعری مظفروارثی

آدمی چونک چکا ہے مگر اُٹھّا تو نہیں

-

admi choonk chuka hai magar utha tu nahi


(119) ووٹ وصول ہوئے