بند کریں
شاعری مرزاداغ دہلویدیوان داغ

تھی نہ تاب ستم تو حضرت دل

-

Thi na taab


(145) ووٹ وصول ہوئے