بند کریں
شاعری نسرین خان

وہ ایک نشہ ہے

-

wo aik nasha hai


(238) ووٹ وصول ہوئے