بند کریں
شاعری صفی لکھنوی

کوئی آباد منزل ہم جو ویراں دیکھ لیتے ہیں

-

koi abaad manzil hum ju veraan dekh lete hain


(251) ووٹ وصول ہوئے