بند کریں
شاعری افضل خان

آدمی خوار بھی ہوتا ہے نہیں بھی ہوتا

-

Aadmi khuawar bhi hota hai nahi bhi hota


(24) ووٹ وصول ہوئے