بند کریں
شاعری آصف شفیع

یہ بھی کرنا پڑا محبت میں

-

yeh bhi karna para muhabbat main


(296) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان