بند کریں
شاعری اعظم کمالراس آیا نہ ہم کو نیا راستہ

(264) ووٹ وصول ہوئے