بند کریں
شاعری خالد علیم

کسی ہجر کی رات کوئی منظر اٹھائے ہوئے

-

kissi hajar ki raat ka koi manzar utha_te hue hain


(327) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان