بند کریں
شاعری منصور آفاق

اک سین دیکھتے ہیں زمیں پر پڑے پڑے

-

Ik scene daikhtay hain zameen par paray paray


(4) ووٹ وصول ہوئے