بند کریں
شاعری محسن چنگیزیرائیگاں کوئی بھی منظر نہیں دیکھا جاتا

(267) ووٹ وصول ہوئے