بند کریں
شاعری نظیر اکبر آبادی

ایسا ہی جو وہ خفا رہے گا

-

Aisa hi jo who


(152) ووٹ وصول ہوئے