بند کریں
شاعری رساچغتائیخواب اس کے ہیں جو چرا لے جائے

(105) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان