بند کریں
شاعری صائمہ کامرانجب کبھی دل میں تمنّاؤں کے دَر کھُلتے ہیں

(172) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان