بند کریں
شاعری تنویر الزماں

تلخ گوئی کا سبب تو پوچھو

-

talkh-goi-ka-sabab-tu-pocho


(229) ووٹ وصول ہوئے