بند کریں
شاعری طارق ہاشمی

زمین میں بھی نہیں آسمان میں بھی نہیں

-

zameen main bhi nahi asmaan main bhi nahi


(233) ووٹ وصول ہوئے