Jab Lagen Zakham To Qaatil Ko Dua Di Jaye

جب لگیں زخم تو قاتل کو دعا دی جائے

جب لگیں زخم تو قاتل کو دعا دی جائے

ہے یہی رسم تو یہ رسم اٹھا دی جائے

دل کا وہ حال ہوا ہے غم دوراں کے تلے

جیسے اک لاش چٹانوں میں دبا دی جائے

انہیں گل رنگ دریچوں سے سحر جھانکے گی

کیوں نہ کھلتے ہوئے زخموں کو دعا دی جائے

کم نہیں نشے میں جاڑے کی گلابی راتیں

اور اگر تیری جوانی بھی ملا دی جائے

ہم سے پوچھو کہ غزل کیا ہے غزل کا فن کیا

چند لفظوں میں کوئی آگ چھپا دی جائے

جاں نثاراختر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(495) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jaan Nisar Akhtar, Jab Lagen Zakham To Qaatil Ko Dua Di Jaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 71 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jaan Nisar Akhtar.