Vehshaat E Hijraan Se Jab Mansoob Ho Jata HooN

وحشتِ ہجراں سے جب منسوب ہو جاتا ہوں میں

وحشتِ ہجراں سے جب منسوب ہو جاتا ہوں میں

اِک خیالی عکس کا محبوب ہو جاتا ہوں میں

تُجھ سے روحانی تعلق ہے سو تُجھ کو دیکھ کر

چند لمحوں کے لئے مجذوب ہو جاتا ہوں میں

تُو نہ ہو تو مجھ کو اپنی بھی خبر رہتی نہیں

تُو ملے تو خوب سے بھی خوب ہو جاتا ہوں میں

فاتحانہ مسکراہٹ اُس کو دینے کے لئے

وہ مقابل ہو تو خود مغلوب ہو جاتا ہوں میں

شعر کہتے وقت آجاتا ہے جب اُس کا خیال

خود بخود ہی صاحبِ اسلوب ہو جاتا ہوں میں

ہجر اُس کا مجھ کو سُولی پر چڑھا دیتا ہے روز

اور قمر چُپ چاپ ہی مصلوب ہو جاتا ہوں میں

جمیل قمر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(357) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jamil Qamar, Vehshaat E Hijraan Se Jab Mansoob Ho Jata HooN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 68 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jamil Qamar.