Qaid E Gham Se Ju Mujhe Dil Ne Rehai Nahi Di

قیدِ غم سے جو مجھے دل نے رہائی نہیں دی

قیدِ غم سے جو مجھے دل نے رہائی نہیں دی

میں نے بھی شہرِ محبت میں دُہائی نہیں دی

اِس قدر شور تھا یادوں کا مرے کمرے میں

اپنی آواز مجھے خود بھی سُنائی نہیں دی

میرے بِگڑے ہوئے سب کام بنے جاتے ہیں

میں نے اچھائی کا بدلہ جو بُرائی نہیں دی

دُشمنوں نے تو مری ذات کو تسلیم کِیا

میری قامت مرے اپنوں کو دِکھائی نہیں دی

آئنہ دُھندلا ہے یا بُجھ گئی بینائی مری

اپنی صورت بھی مجھے صاف دکھائی نہیں دی

بندگی میں جو مزا ہے وہ خُدائی میں کہاں

تُو نے اچھا ہی کِیا مجھ کو خُدائی نہیں دی

جانے والے کو نہیں روک سکا تھا میں قمر

مجھ کو اُس پل کوئی تدبیر سُجھائی نہیں دی

جمیل قمر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(423) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jamil Qamar, Qaid E Gham Se Ju Mujhe Dil Ne Rehai Nahi Di in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 68 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jamil Qamar.