Teri Khwahish Nah Jab Ziyada Thi

تیری خواہش نہ جب زیادہ تھی

تیری خواہش نہ جب زیادہ تھی

زندگی جیسے بے لبادہ تھی

اس لیے مجھ کو مل گئی منزل

میری خواہش مرا ارادہ تھی

ایک تتلی جلے پروں والی

بس وہی میرا خانوادہ تھی

میں نے دیکھا ہے وہ نگر بھی جہاں

روشنی کم نظر زیادہ تھی

چل کے اک عمر مجھ پہ راز کھلا

میری منزل ہی میرا جادہ تھی

جس میں رہتے تھے سب محبت سے

وہ حویلی بھی کیا کشادہ تھی

دور تھا اس لیے محاذ سے میں

فوج میری کہ پا پیادہ تھی

سنگ تھا یا کہ راستے میں نبیلؔ

کوئی دیوار ایستادہ تھی

نبیل احمد نبیل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(360) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nabeel Ahmed Nabeel, Teri Khwahish Nah Jab Ziyada Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nabeel Ahmed Nabeel.