بند کریں
شاعری فراق گورکھپوری

آج بھی قافلہ عشق رواں ہے کہ جو تھا

-

Aaj bhi qaafila e ishq rawaaN hae keh jo tha


(0) ووٹ وصول ہوئے