بند کریں
شاعری ہاشم رضا

وہ دریائے غم کے ستائے ہوئے ہیں

-

wo daryae ghaam k sataye hue hain


(226) ووٹ وصول ہوئے