بند کریں
شاعری اقبال سوکڑی

ہے جو ہر کہیں دے چہرے تیں

-

hai koi ju har kahin dey chehrey teen na nawa meda


(209) ووٹ وصول ہوئے