بند کریں
شاعری اقبال سوکڑی

نہ کہیں سردار دے سونہے نہ کوئی درسال چمدے ہیں

-

na kahin sardar dey sonhey na koi darsaal chamdey hain


(2429) ووٹ وصول ہوئے