بند کریں
شاعری مجید امجد

بنے یہ زہر ہی وجہ شفا جو تو چاہے

-

banay yeh zahir hi waja e shifa


(392) ووٹ وصول ہوئے