بند کریں
شاعری سیما غزل

بارش تھی اور ابر تھا، دریا تھا اور بس

-

Barish thi aor abr tha, darya tha aor bas


(2057) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان