بند کریں
شاعری شاہداقبال

لہو سے پھول بنا ‘ نقش لوحِ دل پر کھینچ

-

lahu se phool bana naqsh loh e dil per khench

شاہداقبال

shahid iqbal

(239) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان