بند کریں
شاعری ذیشان حیدر

سر میداں قلم کو توڑ کر خنجر بناتا ہوں

-

sar e maidan qalam ko


(208) ووٹ وصول ہوئے