Sehn MeiN ORtay Hoay Paat Chlay Aatay HaiN

صحن میں اڑتے ہوئے پات چلے آتے ہیں

صحن میں اڑتے ہوئے پات چلے آتے ہیں

پیڑ کے ٹوٹے ہوئے ہاتھ چلے آتے ہیں

آگہی اگلے زمانوں کی مجھے دینے کو

خواب میں کتنے اشارات چلے آتے ہیں

لوحِ محفوظ سے دنیا کے، خد و خال نئے

ہر نئے آدمی کے ساتھ چلے آتے ہیں

عہدِ آئندہ کی تصویر کے ہیں رنگ سبھی

سوچ میں جتنے سوالات چلے آتے ہیں

علم و ادراک کی تنویر لئے ہر لمحہ

ذہن میں تازہ خیالات چلے آتے ہیں

وقت ہر روز پہنتا ہے پرانے منظر

گھوم کے پھر وہی دن رات چلے آتے ہیں

سلیم فگار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(480) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Saleem Figar, Sehn MeiN ORtay Hoay Paat Chlay Aatay HaiN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 35 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Saleem Figar.