Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai, Urdu Ghazal By Shakir Dehlvi

Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Shakir Dehlvi. Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai comes under the Love category of Urdu Ghazal. You can read Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai on this page of UrduPoint.

ہے ازل سے جس کا دشمن یہ زمانہ عشق ہے

شاکر دہلوی

ہے ازل سے جس کا دشمن یہ زمانہ عشق ہے

ہر طرف قاتل نگاہیں اور نشانہ عشق ہے

دیکھ کر مجھ کو تمہارا مسکرانا عشق ہے

اور ذرا سی بات پر پھر روٹھ جانا عشق ہے

پہلے کھو دینا اسے اپنی انا کے واسطے

پھر اسی کی یاد میں دل کو جلانا عشق ہے

دو ملاقاتیں ہوئیں ہیں اور وہ بھی مختصر

لگ رہا ہے مجھ کو یوں صدیوں پرانا عشق ہے

جب بھی ملتے ہیں تو کرتے ہیں غزل پر گفتگو

اس کے میرے درمیاں اک شاعرانہ عشق ہے

جب مدد ساحل پہ ہو بس اس صدا کی منتظر

ایسے میں خاموش رہ کر ڈوب جانا عشق ہے

چین دن کا نیند راتوں کی اور اس دل کا سکوں

سب گنوا کر جو ملا ہم کو خزانہ عشق ہے

مدتوں کے بعد وہ ہم سے ملا اور یوں ملا

کہہ اٹھے سب دیکھنے والے پرانا عشق ہے

شاکر دہلوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(572) ووٹ وصول ہوئے

You can read Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai written by Shakir Dehlvi at UrduPoint. Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai is one of the masterpieces written by Shakir Dehlvi. You can also find the complete poetry collection of Shakir Dehlvi by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Shakir Dehlvi' above.

Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai is a widely read Urdu Ghazal. If you like Hai Azal Se Jis Ka Dushman Yeh Zamana Ishq Hai, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.