Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se, Urdu Ghazal By Syed Iqbal Rizvi Sharib

Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Syed Iqbal Rizvi Sharib. Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se comes under the Love category of Urdu Ghazal. You can read Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se on this page of UrduPoint.

ابن آدم ہوں گنہگار ہوں پہلے دن سے

سید اقبال رضوی شارب

ابن آدم ہوں گنہگار ہوں پہلے دن سے

اور شفاعت کا طلب گار ہوں پہلے دن سے

میں کہ اک حسرتِ دیدار ہوں پہلے دن سے

تیری الفت میں گرفتار ہوں پہلے دن سے

مجھ کو صحت سے یہ بیماری بھلی ہے مولا

میں ترے عشق میں بیمار ہوں پہلے دن سے

تو نے دے دے کے سہارا مجھے باقی رکّھا

ورنہ گرتی ہوئی دیوار ہوں پہلے دن سے

شکرِ خالق بھی ہے ماں باپ کا ممنون بھی ہوں

میں جو مولا کا طرفدار ہوں پہلے دن سے

تم تو واقف ہو مرے ظاہر و باطن کیا ہیں

بہ خدا شہ کا عزادار ہوں پہلے دن سے

دست بستہ یہ گزارش ہے کہ جلدی آؤ

جاں ہتھیلی پہ میں تیار ہوں پہلے دن سے

رکھ نہ پائی مجھے غفلت میں یہ دنیا شارب

تجھ سے نسبت ہے تو بیدار ہوں پہلے دن سے

سید اقبال رضوی شارب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1915) ووٹ وصول ہوئے

You can read Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se written by Syed Iqbal Rizvi Sharib at UrduPoint. Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se is one of the masterpieces written by Syed Iqbal Rizvi Sharib. You can also find the complete poetry collection of Syed Iqbal Rizvi Sharib by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Syed Iqbal Rizvi Sharib' above.

Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se is a widely read Urdu Ghazal. If you like Ibn E Adam Hun Gunahgar Hun Pehle Din Se, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Love Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.