MENU Open Sub Menu

GHAZAL

ہنستے ہنستے ایک دن

ہنستے ہنستے ایک دن سب کو رُلا کر جاؤں گی

زندگی تیرے ستم پر مسکرا کر جاؤں گی

ریزہ ریزہ کر گئیں مجھ کو تری یادیں مگر

ریت کی صورت انہیں میں اب اُڑا کر جاؤں گی

خشک پتوں کی طرح سے ہے مری جو زندگی

ہجر کے شعلوں میں اب اِس کو جلا کر جاؤں گی

میری آنکھوں پر ابھی تک ہے ترے خوابوں کا بوجھ

اِن کی گٹھڑی اپنی پلکوں پر اُٹھا کر جاؤں گی

قصہ گو سے جو مکمل ہی نہیں ہونی کبھی

اک نہ اک دن وہ کہانی میں سنا کر جاؤں گی

تجھ سے بڑھ کر کون ہے اپنا کہ اپناؤں جسے

اِن خیالوں کو گلے اپنے لگا کر جاؤں گی

جانے سے پہلے میں شاہیں توڑ دوں گی خواب کو

اور پھر تعبیر بھی خود ہی سُلاکر جاؤں گی

ڈاکٹرنجمہ شاہین کھوسہ

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(234) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Dr Najma Shaheen Khosa, GHAZAL in Urdu. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Dr Najma Shaheen Khosa.