بند کریں
شاعری امجد اسلام امجد

ہے کوئی نظر والا

-

Hai koye nazzar wala


(225) ووٹ وصول ہوئے