بند کریں
شاعری خواجہ میر درداذیت کوئی تیرے غم کی میرے جی سے جاتی ہے

(214) ووٹ وصول ہوئے