بند کریں
شاعری منصور آفاق

کھلا ہے در اکیلا گھر پی میں ہوں

-

Khula hai dar akaila ghar pe main hun


(20) ووٹ وصول ہوئے