بند کریں
شاعری قمر ساجد

جب ہٹا پتھر تو کتنی حیرتوں کا در کھلا

-

jab pathar hata tu kitni heratoon ka dar khula


(235) ووٹ وصول ہوئے