بند کریں
شاعری رفیق خیالمژدہ پھر لائے کوئی کل یہ ضروری تو نہیں

(246) ووٹ وصول ہوئے