بند کریں
شاعری ظہیر کاشمیریسکوں ٹوٹا چلی ٹھنڈی ہوا آہستہ آہستہ

(356) ووٹ وصول ہوئے