Har Gaam Sambhal Sambhal Rahi Thi

ہر گام سنبھل سنبھل رہی تھی

ہر گام سنبھل سنبھل رہی تھی

یادوں کے بھنور میں چل رہی تھی

سانچے میں خبر کے ڈھل رہی تھی

اک خواب کی لو سے جل رہی تھی

شبنم سی لگی جو دیکھنے میں

پتھر کی طرح پگھل رہی تھی

روداد سفر کی پوچھتے ہو

میں خواب میں جیسے چل رہی تھی

کیفیت انتظار پیہم

ہے آج وہی جو کل رہی تھی

تھی حرف دعا سی یاد اس کی

زنجیر فراق گل رہی تھی

کلیوں کو نشان رہ دکھا کر

مہکی ہوئی رات ڈھل رہی تھی

لوگوں کو پسند لغزش پا

ایسے میں اداؔ سنبھل رہی تھی

ادا جعفری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(240) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ada Jafri, Har Gaam Sambhal Sambhal Rahi Thi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 90 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ada Jafri.