Sari Raat Ke Bikhare Howay Shairazay Par Rakhi Hain

ساری رات کے بکھرے ہوئے شیرازے پر رکھی ہیں

ساری رات کے بکھرے ہوئے شیرازے پر رکھی ہیں

پیار کی جھوٹی امیدیں خمیازے پر رکھی ہیں

کوئی تو اپنا وعدہ ہی آسانی سے بھول گیا

اور کسی کی دو آنکھیں دروازے پر رکھی ہیں

اس کے خواب حقیقت ہیں اس کی ذات مکمل ہے

اور ہماری سب خوشیاں اندازے پر رکھی ہیں

عزم شاکری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(782) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Azm Shakri, Sari Raat Ke Bikhare Howay Shairazay Par Rakhi Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 23 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Azm Shakri.