Ishq Ka Abhi Qabeel Hota Hai

عشق کا بھی قبیل ہوتا ہے

عشق کا بھی قبیل ہوتا ہے

درد دل کا کفیل ہوتا ہے

یاد آیا نہ کر نمازوں میں

میرا سجدہ طویل ہوتا ہے

بے وفاؤں کے ذکر میں تیرا

تذکرہ بر سبیل ہوتا ہے

عرصۂ زیست تم ذرا سوچو

ہائے کتنا طویل ہوتا ہے

اے شب غم ہر ایک پل تیرا

مجھ کو صدیاں مثیل ہوتا ہے

اشک جو عشق نے بہایا وہ

عاشقوں کا وکیل ہوتا ہے

تنہا بے چارہ سا یہ میرا دل

تیرے بن اب علیل ہوتا ہے

دلشاد نسیم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(498) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Dilshad Naseem, Ishq Ka Abhi Qabeel Hota Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Dilshad Naseem.