Tum Ho Meri Zeest Ka Hasil Shehzade

تم ہو میری زیست کا حاصل شہزادے

تم ہو میری زیست کا حاصل شہزادے

توڑ نہ دینا تم میرا دل شہزادے

اپنے اندر تم کو دیکھ رہی ہوں میں

آئینہ ہے میرے مقابل شہزادے

سیم و زر پر اتراتے تھے دیکھو اب

عشق نگر میں بن گئے سائل شہزادے

شہزادی نے دل ہارا اور جیتی جنگ

مال غنیمت میں تم شامل شہزادے

وصل کی رت کا اب تو استقبال کرو

کوک رہی ہے باغ میں کوئل شہزادے

شہزادے یہ دنیا فکر میں غلطاں ہے

جب سے میں ہوں تم پر مائل شہزادے

ڈگر ڈگر میں بھٹک رہی ہوں آج تلک

تجھ سے بچھڑ کر کیسی منزل شہزادے

اک جانب تو دوسری جانب تیری ربابؔ

ایک زمانہ بیچ میں حائل شہزادے

فوزیہ رباب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(774) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fauziya Rabab, Tum Ho Meri Zeest Ka Hasil Shehzade in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fauziya Rabab.