Phool Khilte Nahi Tawatar Se, Urdu Ghazal By Kashif Aura

Phool Khilte Nahi Tawatar Se is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Kashif Aura. Phool Khilte Nahi Tawatar Se comes under the Sad category of Urdu Ghazal. You can read Phool Khilte Nahi Tawatar Se on this page of UrduPoint.

پھول کھلتے نہیں تواتر سے

کاشف اورا

پھول کھلتے نہیں تواتر سے

آپ ہنستے نہیں تواتر سے

جب سے کچّے مکاں ہوئے مِسمار

پیڑ جیتے نہیں تواتر سے

تیری آنکھیں ہدف بدلتی ہیں

شعر ہوتے نہیں تواتر سے

خواب میں آ کے ماں نے تھپکی دی

بیٹا روتے نہیں تواتر سے

آنسوؤں کا نمک ہے زہر آلود

اشک پیتے نہیں تواتر سے

تُو بھی ماضی کی لَے میں جلتا ہے

ہم بھی سوتے نہیں تواتر سے

عشق ڈوبا ہے جب سے دریا میں

دریا بہتے نہیں تواتر سے

مصلحت کوش کب یہ سمجھیں گے

ظلم سہتے نہیں تواتر سے

گاؤں کاشفؔ اداس رہتا ہے

جب وہ آتے نہیں تواتر سے

کاشف اورا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1488) ووٹ وصول ہوئے

You can read Phool Khilte Nahi Tawatar Se written by Kashif Aura at UrduPoint. Phool Khilte Nahi Tawatar Se is one of the masterpieces written by Kashif Aura. You can also find the complete poetry collection of Kashif Aura by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Kashif Aura' above.

Phool Khilte Nahi Tawatar Se is a widely read Urdu Ghazal. If you like Phool Khilte Nahi Tawatar Se, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Sad Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.