بند کریں
شاعری اعجاز بٹالوی

چاند بھی نہیں نکلا

-

chand bhi nahi nikla


(142) ووٹ وصول ہوئے