بند کریں
شاعری حیدرقریشی

موسم کی بے مہر ہوا میں گرتے ہیں

-

mosaam ki bemeher hawa main girte hain


(359) ووٹ وصول ہوئے